Gujjar's Global Gateway

اعلا ناتCategory Archives

Relief Package For Deserving Gujjar Families

اسلام آباد کی گوجر برادری کے غریب و مستحق افراد کیلئے ریلیف پیکیج

اسلام آباد میں کرونا لاک ڈاؤن سے متاثرہ گوجر برادری کے غریب و مستحق خاندانوں کیلئے پاکستان گوجر فاؤنڈیشن ٹرسٹ رجسٹرڈ اسلام آباد کے زیر اہتمام راشن پیکیج جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ھے.

ماہ رمضان میں اسلام آباد میں رھائش پزیر گوجر برادری کے غریب اور مستحق خاندانوں کو ایک ماہ کا راشن فراھم کیا جائیگا, جس میں آٹا, گھی, چینی, چاول, چائے کی پتی, بیسن, دال چنا, سفید چنا, ٹینگ, ماچس, مصالحہ جات, لائف بوائے, وغیرہ جیسی ضروری اجناس شامل ھیں.

غیر ضروری تشہیر سے بچنے, مکمل شفافیت اور ڈاکومینٹیشن کی غرض سے پاکستان گوجر فاؤنڈیشن ٹرسٹ کے چیئرمین چوہدری الطاف حسین گوجر اور جنرل سیکریٹری چوہدری محمد سلیم گوجر نے اسلام آباد کے ایک بڑے ھول سیل ڈیلر چوھدری محمد تاج گوجر آف مکہ ٹریڈرز, کراچی کمپنی مرکز G-9 , اسلام آباد کیساتھ ایک تحریری معاھدہ کیا ھے. جس کے تحت پاکستان گوجر فاؤنڈیشن ٹرسٹ رجسٹرڈ کے چیئرمین چوہدری الطاف حسین اور جنرل سیکریٹری چوہدری محمد سلیم گوجر کے دستخطوں سے مستحق فرد کو ایک تحریری اجازت نامہ جاری کیا جائیگا, جسے مذکورہ فرد مکہ ٹریڈرز کے مالک چوہدری محمد تاج صاحب کے سپرد کر کے ریلیف پیکیج میں شامل اشیاء براہ راست وصول کرسکے گا. اسطرح اس ریلیف پیکیج سے مستفید ھونے والے شخص کی عزت نفس بھی محفوظ رھے گی, بعد ازیں ضروری پڑتال کے بعد جاری شدہ سامان کے عوض پاکستان گوجر فاؤنڈیشن کی جانب سے چوہدری محمد تاج مالک مکہ ٹریڈرز کو بذریعہ چیک ادائیگی کر دی جائیگی.

ابتدائ طور پر یہ سلسلہ صرف اسلام آباد میں مقیم گوجر برادری کے مستحق خاندانوں کی مدد کیلئے شروع کیا گیا ھے لیکن زیادہ وسائل مہیا ھونے کی صورت میں اس کے دائرہ کار کو ملک کے دیگر شہروں تک وسعت دی جائیگی.

یاد رھے کہ پاکستان گوجر فاؤنڈیشن ٹرسٹ کے حسابات, ٹرسٹ کا کوئی بھی رکن یا ایک روپیہ عطیہ کرنے والا ڈونر بھی صرف ایک دن کے نوٹس پر انسپیکٹ کر سکتا ھے.

پاکستان گوجر فاؤنڈیشن ٹرسٹ سے متعلق تمام سرگرمیوں پر آنے والے جملہ overhead اخراجات ٹرسٹیز خود برداشت کرتے ھیں اور اس مد میں کوئی پیسہ ٹرسٹ کو debit نہیں کیا جاتا. دیگر ممبران کی طرح ٹرسٹیز نے بھی اپنی contribution ٹرسٹ اکاؤنٹ میں جمع کروائی ھیں.

اس میسیج کا مقصد تعریف اور توصیف سمیٹنا ہرگز نہیں ھے
بلکہ
آپ کی خدمت میں حسب ذیل دو گزارشات کرنا مقصود ھے::

1– آپکے علم میں اسلام آباد میں مقیم کوئی غریب و مستحق گوجر خاندان ھو تو آپ اسے ٹرسٹ ذمہ داران کی جانب اپنی تحریری تصدیق کے ساتھ ریفر کیجئے.2– آپ سے گزارش ھے کہ اپنی زکوۃ اور صدقات کی رقوم ٹرسٹ اکاؤنٹ میں جمع کروائیے  �

آل پاکستان استحکام وطن گوجر سیمینار

 چلو اسلام آباد چلو

* کیونکہ *

گوجر قوم استحکام پاکستان کی علامت ھے۔

گوجر قوم وفاق پاکستان کی مضبوطی اور بقاء کی ضامن ھے۔

گوجر قوم ناقابل تسخیر افواج پاکستان کی پشت پر موجود اور ھمقدم ھے۔

گوجر قوم، وطن عزیز کی سلامتی کو ھر خطرہ اور سازش کے سامنے سینہ سپر ھے۔

گوجر پاکستان کی واحد قوم ھے جو چاروں صوبوں، وفاقی دارالحکومت، گلگت-بلتستان، فاٹا اور آزاد جموں و کشمیر کی ھر تحصیل اور ھر ضلع میں بہت بڑی تعداد میں آباد ھونے کیوجہ سے حقیقی معنوں میں پاکستان کے داخلی استحکام اور داخلی دفاع کی واحد موٹر قوت ھے جبکہ دیگر قبائل محض ایک تحصیل ضلع یا زیادہ سے زیادہ کسی ایک صوبہ تک محدود ھیں۔

پاکستان کا استحکام اور سلامتی گوجر قوم کے ھر فرد کے ایمان کا بنیادی نکتہ ھے جو غیر مشروط ھونے کیساتھ ساتھ کسی غرض یا مفاد سے بہت بلند اور بالا تر ھے۔

گوجر قوم پاکستان میں چار کروڑ کی تعداد میں آباد ھے کچھ حلقوں کے مطابق پاکستان میں گوجر قوم کی تعداد اس سے بھی زیادہ ھے۔

یہ بیحد ستم ظریفی کا معاملہ ھے کہ 70 سال گزرنے کے باوجود ھم مسند اقتدار پر فائز احباب کو تحریک پاکستان کے اولین اور بانی راھنماء نقاش پاکستان، خالق اسم پاکستان، بطل حریت، چوہدری رحمت علی، بانی صدر، پاکستان نیشنل موومنٹ کا، کیمبرج کے عیسائی قبرستان میں بطور امانت دفن، جسد خاکی وطن لانے پر قائل آمادہ یا مجبور نھیں کر سکے۔ ھم سے بہتر تو افغان قوم نکلی جس نے سید جمال الدین افغانی کا جسد خاکی انتقال کے 40 چالیس سال بعد ترکی سے لا کر افغانستان میں دفن کیا۔

گوجر پاکستان کا سب سے بڑا اکثریتی اور موثر قبیلہ ھے لیکن حکومتی یا غیر حکومتی سطح پر اس کی عددی اکثریت کو قطعی اھمیت نھیں دی جاتی لہذا اس پس منظر میں انھیں آبادی کے تناسب سے نمائندگی دینے کا تو سوال ھی پیدا نھیں ھوتا۔ یہی وجہ ھے کہ گوجر قوم کے مسائل بالخصوص غربت، پسماندگی، ناخواندگی، بیروزگاری، انفراسٹرکچر کی عدم دستیابی اور سماجی خستہ حالی میں روز افزوں اضافہ ھوتا جا رھا ھے۔ خاص طور پر صوبہ کے پی کے، آزاد جموں و کشمیر، گلگت-بلتستان، قبائلی علاقہ جات نیز پنجاب کے کچھ اضلاع میں آباد گوجر قوم بہت زیادہ مسائل کا شکار ھے۔

دیگر بہت سی وجوہات کے علاوہ ھمارے مسائل کی ایک بڑی وجہ یہ بھی ھے کہ پاکستان میں گوجر قوم نے نہ تو صحیح معنوں میں اپنی قوت منوائی ھے اور نہ ھی موثر انداز میں اپنی ساکھ و شناخت تسلیم کروائی ھے۔

ان ھی مسائل و امور کو پیش نظر رکھتے ھوئے ھم جملہ ساتھیوں نے ملک بھر سے گوجر قوم کے لئے درد دل رکھنے والے احباب نیز سرکردہ و ذمہ دار شخصیات کو آئندہ لائحہ عمل مرتب کرنے کیلئے صبح 9 بجے سے لے کر شام تک ایک روزہ
“”آل پاکستان گوجر سیمینار””
جولائی 2018 کے دوسرے ھفتہ میں منعقد کرنے کا پروگرام تشکیل دیا ھے۔

 زیادہ امکان ھے کہ یہ ملک گیر سیمینار اسلام آباد کے چائنہ سنٹر یا کسی مقامی ھوٹل میں منعقد ھوگا))۔ پروگرام کو حتمی شکل دیئے جانے کے فورا بعد نیز بہت جلد جملہ احباب کو باقاعدہ دعوت دی جائے گی۔

پاکستان کی تمام تحصیلوں اور اضلاع سے اس “آل پاکستان استحکام وطن گوجر سیمینار”” میں شرکت کے متمنی احباب اپنے نام، ولدیت، عارضی و مستقل رھائشی پتہ جات، موبائل و ٹیلیفون نمبر اور شناختی کارڈ نمبر بارے تفصیلات فراہم کردیں تاکہ باقاعدہ دعوتی کارڈ جاری کئے جا سکیں۔

مذکورہ بالا کوائف سیکورٹی مقاصد نیز دعوتی کارڈ جاری کرنے کیلئے درکار ھیں۔

دیگر اضلاع کے ذمہ داران اپنے ھمراہ آنیوالے وفود کی بابت جملہ تفصیلات قبل از وقت فراھم کردیں.

 ایڈریس پر بھجوا سکتے ھیں۔Emaiآپ مذکورہ کوائف نیز اس سیمینار کیلئے اپنی تجاویز حسب ذیل ای میل

والسلام

چوہدری محمد اشرف گوجر 
ایڈووکیٹ سپریم کورٹ 
مسلم بلاک، F-8 مرکز 
اسلام آباد